میں آخری سانس تک اس سازش کا مقابلہ کروں گا: عمران خان


اتوار کو نیشنل اسمبلی میں ووٹ سے پاکستان کی سمت طے ہوگی اور طے ہوگا کہ کیا پاکستان پھر انہی لوگوں کے ہاتھوں میں آ جائے گا جو بدعنوانی میں ڈوبے ہوئے ہیں۔

فائل تصویر آئی اے این ایس
فائل تصویر آئی اے این ایس
user

Engagement: 0

پاکستان کے وزیر اعظم عمران خان نے جمعرات کو اپنے خلاف تحریک عدم اعتمادکو غیر ملکی طاقتوں اور ملک کے بدعنوان اپوزیشن لیڈروں کے درمیان کی ایک گہری سازش قرار دیتے ہوئے کہا کہ وہ اس کے سامنے نہیں جھکیں گے اورآخری سانس تک اس کا مقابلہ کریں گے۔

پاکستانی عوام سے ٹیلی وژن پر لائیو خطاب کرتے ہوئے کرکٹ سے سیاست میں آنے والے عمران خان نے کہا کہ یہ وقت پاکستان کے مستقبل کا تعین کرنے والا وقت ہے۔ پاکستان کا مقصد اسلامی فلاحی حکومت بننا تھا۔ انصاف، انسانیت اور خود داری ہمارے منشور میں سرفہرست تھی۔

انہوں نے کہا کہ سیاست میں خواب لے کر آیا ہوں، مجھے کسی چیز کی کمی نہیں ہے۔ دوسرے ممالک پاکستان سے سیکھتے تھے لیکن میں نے پاکستان کو نیچے آتے اور ذلیل ہوتے دیکھا ہے۔ انہوں نے کہا ،’25 سال قبل جب میں نے سیاست کا آغاز کیا تو ہمیشہ کہا کرتا تھا کہ میں کسی کے سامنے نہیں جھکوں گا اور اپنی قوم کو کسی کی غلامی نہیں کرنے دوں گا’۔

وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ ہم نے افغانستان میں سوویت یونین کے خلاف امریکہ کے ساتھ جنگ ​​لڑی، بڑی تعداد میں مجاہدین کو تربیت دی، لیکن اس لڑائی کے بعد ہمیں کوئی کریڈٹ نہیں ملا۔

مسٹر خان نے کہا کہ وہ پاکستان کی خارجہ پالیسی کو پاکستان کے 22 کروڑ عوام کے مفاد میں بنانا چاہتے ہیں۔ یہ پالیسی امریکہ، یورپ یا ہندوستان کے خلاف نہیں ہے۔ عمران خان نے اپنے خطاب میں ہندوستان کا بھی حوالہ دیا اور کہا کہ انہوں نے اس اقدام کی مخالفت کی جب ہندوستان نے 5 اگست 2019 کو کشمیر میں بین الاقوامی قوانین کی خلاف ورزی کی۔

انہوں نے کہا کہ افغانستان میں سوویت یونین کے خلاف مغرب کی جنگ میں پاکستان کو فرنٹ لائن اسٹیٹ بنانا جنرل پرویز مشرف کی سب سے بڑی غلطی تھی۔ انہوں نے اعتراف کیا کہ افغانستان میں سوویت مداخلت کے خلاف جنگ میں پاکستان نے ہزاروں مجاہدین کو تربیت دی اور وہی مجاہدین بعد میں پاکستان کے خلاف ہو گئے۔ انھیں صرف مغربی ممالک کی غلامی کی مخالفت کرنے پر طالبان خان کہا گیا۔

انہوں نے کہا کہ اتوار کو نیشنل اسمبلی میں ووٹ سے پاکستان کی سمت طے ہوگی اور طے ہوگا کہ کیا پاکستان پھر انہی لوگوں کے ہاتھوں میں آ جائے گا جو بدعنوانی میں ڈوبے ہوئے ہیں۔ اپوزیشن پاکستان کے ساتھ اتوار کو غداری کرنے جا رہی ہے، عوام غداری کرنے والوں کو کبھی نہ بھولیں۔

عمران خان نے کہا کہ کوئی اس غلط فہمی میں نہ رہے کہ عمران خان خاموش بیٹھ جائے گا ، میں نے کافی لڑائی لڑی ہے، میں لڑوں گا۔ کچھ لوگ پاکستان کے عالمگیر حق کی سودے بازی کر کے بیٹھے ہیں، پاکستان کے عوام نہ انھیں معاف کریں گے اور نہ ہی ان قوتوں کو جن کے ساتھ یہ سودا کیا گیا۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل ([email protected]) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔




Source link

(Visited 1 times, 1 visits today)
Share this...
Share on Facebook
Facebook
0Tweet about this on Twitter
Twitter
0 0 votes
Article Rating
Subscribe
Notify of
guest
0 Comments
Inline Feedbacks
View all comments