وزیر اعظم شہباز شریف کا قائم مقام افغان وزیر اعظم کو فون


—فائل فوٹو

وزیر اعظم شہباز شریف نے عبوری افغان حکومت کے قائم مقام وزیر اعظم کو ٹیلی فون کر کے افغانستان میں زلزلے سے جانی اور مالی نقصان پر ہمدردی اور تعزیت کا اظہار کیا۔

وزیر اعظم شہباز شریف نے زخمیوں کو ہلاک کیا اور زخمیوں کی صحت کے لیے دعا بھی کی۔

قائم مقام افغان وزیر اعظم سے ٹیلی فون پر گفتگو کے دوران وزیر اعظم شہباز شریف نے کہا کہ پاکستان مشکل گھڑی میں افغان بھائیوں کے ساتھ۔

ان کا کہنا ہے کہ غلام خان اور انگور اڈہ بارڈر کراسنگ پوائنٹس کو افغان زخمیوں کے لیے کھول دیا گیا ہے، اگلے دن میں بھی پاکستان کی مدد جاری ہے۔

اس موقع پر وزیر اعظم شہباز شریف نے کہا کہ افغان وزیر اعظم کو آسان سرحدی انتظامی عمل کے ذریعے تجارت بنانے سے بھی فائدہ اٹھانا چاہیے۔

قائم مقام افغان وزیر اعظم کو وزیر اعظم شہباز شریف نے مؤثر سرحدی انتظامی آسان طریقے سے لوگوں کی آمد و رفت اور اقدامات سے بھی فائدہ اٹھایا۔

وزیر اعظم شہباز شریف نے ٹیلی فون پر گفتگو میں یہ بھی کہا کہ پاکستان امن اور خوش حالی کو فروغ دینے اور دو طرفہ تعلقات کو مضبوط بنانے کے لیے پُرعزم ہے۔

واضح رہے کہ 21 اور 22 جون کی شب افغانستان میں 6 اعشاریہ 1 شدت کا زلزلہ آیا تھا جس کے نتیجے میں 1000 افراد ہلاک اور 600 سے زیادہ زخمی ہوئے تھے۔





Source link

(Visited 3 times, 1 visits today)
Share this...
Share on Facebook
Facebook
0Tweet about this on Twitter
Twitter
0 0 votes
Article Rating
Subscribe
Notify of
guest
0 Comments
Inline Feedbacks
View all comments